وزیراعلیٰ بلوچستان کے استعفیٰ کی افواہیں

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے استعفیٰ کی خبروں پر وضاحت کرتے ہوئے کہنا ہے جعلی خبروں کی بھرمار ہے، استعفیٰ دیا ہے اور نہ ہی دینے جارہا ہوں۔ کوئٹہ میں بی این پی عوامی کے سربراہ سید احسان شاہ سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا کہ نیوز چینلز کو کسی بھی معاملے اور بیانات سے متعلق پہلے تصدیق کر لینی چاہئے، گورنر بلوچستان کو استعفیٰ بھیجنے کی گردش کرنیوالی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، سوشل میڈیا پر ایسی من گھڑت خبریں چلانے سے اجتناب کیا جائے۔
بی اے پی رہنماء میر عاصم کرد گیلو سے ملاقات میں ایک وفد نے وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہارکیا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں اپنی پارٹی کے اراکین اور دوستوں کا مشکور ہوں جنہوں نے ہمیشہ مجھ پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا، بلوچستان عوامی پارٹی صحیح معنوں میں ایک ترقی پسند جماعت بن کر ابھری ہے، پارٹی نے بلوچستان کو ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن کر دیا ہے۔ جام کمال خان نے مزید کہا کہ پارٹی بلا رنگ و نسل صرف صوبے کے عوام کی ترقی و ترویج کے مشن پر گامزن ہے، 3 سال قبل بی اے پی نے جو منشور پیش کیا تھا، الحمداللہ آج ہم کہہ سکتے ہیں کہ ہم نے اس سے بھی آگے جاکر کام کیا، ترقیاتی عمل کا مشاہدہ ناصرف یہاں کے عوام خود کر رہے ہیں بلکہ باہر سے آنیوالے لوگ بھی اس کا اعتراف کررہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں